203

15 سیکنڈز میں بس سے ریل بن جانے والی بس۔۔۔ٹیکنا لوجی کی دنیا سے حیران کن خبر

جاپانی انجنیئرز نے ایک ایسی حیرت انگیز بس بنا لی ہے جو محض 15 سیکنڈزمیں بس سے ریل بن سکتی ہے، اور ابھی سڑک پر دوڑنے والی گاڑی ابھی پٹریوں پر چلتی دکھائی دیتی ہے۔جاپانی انجنیئرز کی تیار کردہ یہ گاڑی ڈوول موڈ وھیکل (ڈی ایم وی) سڑک اور ریل کی پٹری دونوں پر دوڑ سکتی ہے، 25 دسمبر کو اس گاڑی کا باقاعدہ افتتاح کیا جائے گا۔اس گاڑی کو دوغلی گاڑی کہا گیا ہے، جو صرف پندرہ سیکنڈز میں ٹائرز کی جگہ ریل کے آہنی پہیوں پر چلنے کی حالت میں منتقل ہو جاتی ہے۔آپ یہ جان کر حیران رہ جائیں گے کہ یہ گاڑی 20 سالہ تحقیق کے بعد تیار ہوئی ہے، 2002 میں ڈوول موڈ وھیکل پر کام شروع کیا گیا تھا، کئی ٹرائلز کے بعد اب یہ پوری طرح تیار ہو چکی ہے۔پچیس دسمبر کو اسے عوام کے سامنے چلایا جائے گا، اور اس کے لیے جاپان میں 2 مقامات کا انتخاب کیا جا چکا ہے، جن کا درمیانی فاصلہ 123 کلو میٹر ہے۔یہ گاڑی ڈیزل سے چلتی ہے، اور اس میں 23 افراد بیٹھنے کی گنجائش ہے، سڑک پر چلتے چلتے جب یہ ریل میں تبدیل ہونے لگتی ہے تو میکانکی انداز میں اندر موجود لوہے کے پہیے بہت تیزی سے نمودار ہو جاتے ہیں، اور ربڑ کے ٹائر زمین کی سطح سے اوپر اٹھ جاتے ہیں۔اس بس کو سیاحتی مقاصد کے لیے استعمال کیا جائے گا، یوں تو پٹری پر اس کی طے کردہ رفتار 80 کلو میٹر فی گھنٹہ ہے تاہم عملی طور پر یہ 60 کلو میٹر کی رفتار سے دوڑے گی۔بتایا گیا ہے کہ اس بس کو جاپان کے خاص زلزلہ والے حالات کو دیکھتے ہوئے ڈیزائن کیا گیا ہے، تاکہ روڈ خراب ہونے کی صورت میں اسے ریلوے پٹریوں پر دوڑایا جا سکے، تاہم حادثات کے خطرے کے پیش نظر اسے معمول کی ریلوے لائن پر نہیں چلایا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں